بنیادی صفحہ / سخن (صفحہ 3)

سخن

غزل

آئیے خواب کی تعبیر کریں اپنا گھر آپ ہی تعمیر کریں وہ جو احسان کیے جاتے ہیں عین ممکن ہے کہ تقصیر کریں چاند تاروں پہ پہنچ سے بہتر اپنی دنیا ہی کی تسخیر کریں رامش ورنگ کے قبضے میں ...

مزید پڑھیں »

غزل

یہ کس مقام پہ لایا گیا خدایا مجھے کہ آج روند کے گزرا ہے میرا سایہ مجھے میں جیسے وقت کے ہاتھوں میں اک خزانہ تھا کسی نے کھودیا مجھ کو کسی نے پایا مجھے میں ایک لمحہ تھا اور ...

مزید پڑھیں »

اللہ سے آپ کا کوئی تعلق ہے یا نہیں؟! اپنی زندگی کا ، اپنی مساعی کا، اور اپنے جذبات کا جائزہ لیجئے۔ اپنا حساب آپ خود لے کر دیکھئے کہ ایمان لاکر اللہ سے بیع کا جو معاہدہ آپ کرچکے ...

مزید پڑھیں »

کل اور آج کل کی اور آج کی تعلیم میں بڑا فرق ہے پہلے طالب علم تعلیم حاصل کرنے کی غرض سے استاد کے پاس جایا کرتے تھے لیکن آج خود استاد ٹیوشن کے لیے طالب علم کے گھر جاتے ...

مزید پڑھیں »

غزل فطرت کی کانِ سنگ کا حاصل نہیں ہوں میں پگھلوں نہ غم سے کیوں کہ ترا دل نہیں ہوں میں دِل میں جو ہے خیال لگا ہے وہ جاں کے ساتھ ہر فکرِ نو رسیدہ کی منزل نہیں ہوں ...

مزید پڑھیں »

قوم کے خواص قوم دو طبقوں پر مشتمل ہوا کرتی ہے۔ ایک طبقہ عوام، دوسرا طبقہ خواص۔ طبقہ عوام اگرچہ کثیرالتعداد ہوتا ہے اور قوم کی عددی قوت اسی طبقہ پر مبنی ہوتی ہے۔ لیکن سوچنے اور رہنمائی کرنے والے ...

مزید پڑھیں »

غزل سوز دروں نے مجھ کو عطا کی ہے زندگی کس نے کہا کہ عشق نے جینا کیا حرام پہلا قدم رکھا ہے ابھی رہگزار میں مجھ سے ہے کیوں فرار تجھے گردش مدام آتش کدے نے اور بھی بھڑ ...

مزید پڑھیں »

اقتباس انسان کی دوکمزوریاں انسان دو چیزوں کی وجہ سے کمزور ہوتا ہے۔ ایک موت کا خوف ، دوسرا رزق سے محرومی کا خوف۔ یہی خوف اندرونی جابروں کے آگے آدمی کو جھکاتا ہے، اور یہی بیرونی دشمنوں سے شکست ...

مزید پڑھیں »

آخری اذان

حضرت ابوعبداللہ بلال بن رباح رضی اللہ عنہ کا شمار دربارِ رسالت کے ا ن عظیم المرتبت اراکین میں ہوتا ہے، جن کا اسم گرامی سن کر ہر مسلمان کی گردن فرطِ احترام وعقیدت سے جھک جاتی ہے۔ شام کے ...

مزید پڑھیں »