براؤزنگ ٹیگ

ibrahim as

عیدالاضحیٰ کا اصل پیغام

عید الاضحٰی میں بھی تکبیر بیان کرنا ہی مقصد ہے لیکن تکبیر اس لئے کے اللہ تعالیٰ نے وسائلِ کائنات کو ہمارے لیئے مسخر کیا ہے۔ کائنات کےرسورسس پر ہمیں کنٹرول عطا کیا ہے۔

قربانی کا حقیقی مفہوم

عید الاضحیٰ جسے ہر سال قمری مہینہ ذی الحجہ کی دس تاریخ کو منایا جاتا ہے، مسلمانوں میں بہت اہمیت حاصل ہے۔ ایک طرف جہاں سماجی پہلو سے یہ خوشی و مسرت، باہمی ربط اور ہمدردی کا موقع فراہم کرتی ہے وہیں دوسری طرف اس کی مذہبی حیثیت بھی ہے۔ دنیا

سن اے تہذیب حاضر کے گرفتار۔۔

حضرت ابراہیم کی منصوبہ بندی اور دعوت دین کی لگن بڑے ارفع درجے کی تھی ، انہوں نے دعوتی کام اہداف ، طے شدہ منصوبے اور مراحل میں کیا۔

حضرت ابراہیم: صاحب دعوت و عزیمت

انسانوں کو چھانٹنے ، کندن بنانے اور اپنے لیے مخصوص کر لینے  کا ایک خدائی قانون ہے ، ایک انوکھا انداز ، ایک نرالا طریقہ۔  جس سے گزر کر انسان  کو اپنے آپ  کو منوانا اور اور ثابت کروانا پڑتا ہے ۔ پھر   لذت پزیرائی

حضرت ابراہیم کی ایمان افروز اورسبق آموزدعائیں

آزمائش کے دور   میں دعا کی اہمیت کچھ اور بڑھ جاتی ہے۔  چہار جانب  خوف و   ہراس  کی فضا  اور ظلم و جور کی رت اور نفرت  و انابت  کاماحول ہو تو بندۂ مومن  دامنِ دعا کی جانب بھاگتا ہے جہاں اسے اطمنان قلب  بھی، جستجو کے طریقے بھی اور آگے بڑھنے کی…
Verified by MonsterInsights