Home / Contact Us

Contact Us

 

  • Contact Information
  • Address
  • Map
Editor
Mustajab Khatir
[email protected]
Mobile:

Manager

Bilal Khan

Tel: (+91) 8447622919
[email protected]
D-300,
Dawat Nagar,
Abul Fazal Enclave,
Jamia Nagar, Okhla,
New Delhi-110025
Tel: (+91) 11-26949817

 

 

 

 

 

 

 

[contact-form-7 404 "Not Found"]

 

12 comments

  1. I want to subscribe this magazine. What is the procedure?

  2. Assalamu Alaikaum,

    I am looking for a course on how to do Dawat-e-ilallah. I totally agree with your editorial of Nov’15 edition that people should be trained in field and on practical issues of Dawat. Any suggestions?

    ~Shoyeb

  3. mohammad saffiullah saffi

    اسلام علیکم ایڈیٹر صاحب
    برائے مہرابانی میں نے ایک ریسرچ پیپر تیار کیاہے اور رفیق منزل میں شائع کرنا چاہتاہوں اگراس کو شائع کرکے مشکور ہونے کا موقع دیں
    اپکا مخلص محمد صفی اللہ صفی پی ایچ ڈی ہزارہ یونیورسٹی

  4. Asslamu Walaikum
    please update your Facebook page …
    and send me contact number of Editor and manager
    i tried to call on above mentioned number but no one can response

  5. I have to thank you for the efforts you have put in penning this
    website. I am hoping to see the same high-grade blog posts by you later on as well.

    In truth, your creative writing abilities has encouraged me
    to get my very own blog now 😉

  6. Salam
    Maine dec 16 may 1yr subscription fees online aap ke website k zariye bhare the.lekin abhi tak koi reply ya shumara nahi mlia.

  7. رفیق منزل کا سالانہ خریدار بننے کا خواہشمند ہوں۔براے مہربانی رہنمای فرمایں

  8. صاحب عالم انصاری

    باتوں سے بھی بدلی ہے کسی قوم کی تقدیر؟
    بجلیوں کے چمکنے سے اندھیرے نہیں جاتے
    لفظی ہمدردی میانمار کے مظلوم مسلمانوں کے کسی کام آنے والی نہیں ہے۔ اور یہ بات سچ ہےکہ آج قوانین و ضوابط اور سرحدوں کی بندشوں میں ہم گھرے ہیں۔ ہم چاہ کر بھی ان کے لئے کچھ نہیں کرسکتے۔ یہ دنیا پہلے جیسی نہیں رہی کہ کوئی محمد بن قاسم اور طارق بن زیاد آئے گا اور سب ٹھیک کرکے چلا جائے گا۔ اس مسئلہ کو موجودہ بین الاقوامی قوانین کے ذریعہ بھی حل ہونے کی کوئی گنجائش نظر نہیں آ رہی ہے۔ فلسطین اور کشمیر اس کی زندہ مثال ہیں۔ میانمار سرکار بلا خوف و خطر اتنی جرأت و بہیمانہ طریقہ سے جو مسلمانوں کو مار رہی ہے تو اس کی پشت پناہی بھی بڑی طاقتیں ہی کر رہی ہیں لیکن بڑی طاقتوں سے ڈر کر مسلم ممالک کا خاموش تماشائی بنے رہنا بھی غلط ہے۔ بلا شبہ میانمار پر کسی بھی رد عمل کے نتیجہ میں میانمار کےساتھ وہ طاقتیں بھی مسلمانوں کے خلاف صف آرا ہو جائیں گی جو وہاں مسلمانوں کی نسل کشی پر معنی خیز خاموشی اختیار کی ہوئیں ہیں اور یہ معاملہ ایک بڑی جنگ کی صورت اختیار کر سکتا ہے۔ اس کے باوجود مسلم مملک کو ڈرنا نہیں چاہئے۔ ایمان کی طاقت کے مقابلہ میں دنیا کی ہر طاقت بے معنیٰ ہے۔ اگر ایمان ہی اب نہیں رہا تو پھر شاہی محل میں بیٹھ کر اللہ کی تسبیح کرو یا طوائفوں کے ساتھ عیاشی کرو۔ اگر ایمان باقی ہے تو یاد کرو وہ دن جب ۱۰۰۰ کے مقابلہ ہم صرف ۳۱۳ تھے۔ میانمار کے مظلوم مسلمانوں کے حق ترکی کے ساتھ ایران، مالدیپ اور ملائیشیا کے کی سیاسی قیادت کی آواز اور کارروائی قابل قدر ہے۔ رجب طیب اردوغان کے جرات مندانہ اقدام کو سلام۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*