دعوتی تجربات پسند آئے

ماہ جون ۲۰۱۴ء کا رفیق منزل موصول ہوا شکریہ!
مضمون’’دیکھو مجھے جو دیدۂ عبرت نگاہ ہو‘‘ ص ۹؍ مولانا نسیم احمد غازی فلاحی صاحب کے دعوتی تجربات بہت پسند آئے۔ لڑکی کا اسلام کی طرف مائل ہونا اور مسلم دکان دار کا دھوکہ دینا واقعی نفرت پیدا کردیتا ہے۔جبکہ نمبر(۲) کے تحت ملّاجی کی سچائی اور ایمان داری سے وعدہ پورا کرنا محبت اور اسلام کی طرف رغبت دلاتا ہے۔
تذکیر کے علاوہ مہمان اداریہ میں صدر تنظیم محترم اشفاق احمد شریف صاحب کی باتیں قابل توجہ ہیں۔
آخر میں یہ بات بھی عرض کرتا چلوں کہ ’’ذکر رفتگاں‘‘ ص۳۸؍مجھے بہت پسند ہے، اس بار جناب محمد قطبؒ کی زندگی بیان کی گئی ہے جس میں یہ بات درج ہے کہ محمد قطبؒ اور سید قطب شہیدؒ دو الگ الگ شخصیت ہیں۔ جبکہ پہلے میں دونوں شخصیتوں کو ایک ہی سمجھتا تھا لیکن اب جاکر واضح ہوا کہ جناب محمد قطبؒ کے بڑے بھائی سیّد قطب شہیدؒ ہیں۔
فاروق عبد اللہ فضاؔ
۲۰ ؍جون ۲۰۱۴ ؁ء
خصوصی شمارہ پسند آیا

ماہ رمضان پر رفیق منزل کا گزشتہ سال کی طرح امسال بھی خصوصی شمارہ کافی پسند آیا۔ مدیر محترم کی یہ بات واقعی اہم ہے اور اس پر کام کرنے کی ضرورت ہے کہ ’’ماہ رمضان پر ان خصوصی شماروں کی اشاعت کا مقصد اس کے علاوہ کچھ بھی نہیں کہ ماہ رمضان اور اس کی عبادتوں کے صحیح تصور کو ملت اسلامیہ کے درمیان عام کیا جائے، اور ملت کی ذہنی وفکری تربیت اور تعمیروترقی میں اس ماہ مبارک کے عظیم کردار کو سامنے لایا جائے، تاکہ یہ ماہ مبارک انفرادی واجتماعی زندگی میں تبدیلی کا جو پروگرام رکھتا ہے، اس سے کماحقہ مستفید ہونے کا رجحان عام ہوسکے۔‘‘مولانا محمد فاروق خاں، مولانا محمد عنایت اللہ اسد سبحانی، ایس امین الحسن، ڈاکٹر محمد رفعت اور ڈاکٹر محی الدین غازی کے علاوہ سہیل امیر شیخ، طیب احمد اور سعود اعظمی کے مضامین خصوصی طور سے پڑھنے کے لائق ہیں۔
ہم قارئین کی جانب سے رمضان المبارک پر اس دوسری خصوصی اشاعت پر بہت بہت مبارکباد قبول فرمائیں، اللہ رب العزت ہمیں اپنے دین کی زیادہ سے زیادہ خدمت انجام دینے اور اس کے صحیح تصورات کو ملت اسلامیہ اور برادران وطن کے درمیان عام کرنے کی توفیق مرحمت فرمائے۔ آمین ثم آمین۔
عظیم ارشد، لکھنؤ(یوپی)
رمضان المبارک پر خصوصی اشاعت اور ایک قاری کے چند مشورے

جولائی ۲۰۱۴ ؁ء کا شمارہ نظر نواز ہوا۔ رمضان المبارک پر دوسری خصوصی اشاعت پر ہماری جانب سے مبارکباد قبول فرمائیں۔ شمارہ اہم ہے، مضامین دلچسپ اور مفید ہیں۔ ’ارادے‘ کالم کے تحت نوجوان ساتھیوں کے تأثرات حوصلہ افزا ہیں۔ عیدالفطر۔ مقصداور پیغام کے عنوان سے ڈاکٹر محمد عنایت اللہ اسد سبحانی کا خطاب بہت ہی فکرانگیز ہے۔ دیگر مضامین بھی مطالعہ کے لائق ہیں۔ بالخصوصی قیام اللیل اور اعتکاف والے مضامین کو عام کرنے کی ضرورت ہے۔ مولانا محمد فاروق خاں صاحب کے مضامین بھی اہم اور لائق مطالعہ ہیں۔ البتہ رفیق کے خصوصی شماروں، بالخصوص رمضان والے شمارے کے تعلق سے چند مشورے پیش کرنا چاہتا ہوں:
(۱) رفیق کے خصوصی شماروں کے دورانئے کا تعین ہونا چاہئے، اور اس دورانئے میں بہر صورت خصوصی شمارہ منظر عام پر آجانا چاہئے۔ کئی سال کے وقفے کے بعد ادھر اس میقات میں یکے بعد دیگرے کئی خصوصی شماروں کی اشاعت لائق تحسین اقدام ہے، اس تسلسل کو برقرار رہنا چاہئے۔
(۲) خصوصی شماروں کے لیے عناوین کا تعین بھی کافی اہم مسئلہ ہے۔ عناوین کا تعین قارئین کو دیکھ کر ہونا چاہئے، میرے خیال سے رفیق کے قارئین کی بڑی تعداد کالجز اور کیمپس میں رہنے والے طلبہ اور نوجوانوں کی ہے۔ چنانچہ ایسے موضوعات کا تعین ہونا چاہئے جو ان کے لیے دلچسپی کا باعث ہوں، گزشتہ دنوں مدارس اسلامیہ کے تعلق سے خصوصی شمارہ اپنی اہمیت اور افادیت کے باوجود ہمارے عام ساتھیوں کے لیے اپنے اندر کچھ بھی دلچسپی کا سامان نہیں رکھتا تھا۔ اس پہلو پر خصوصی توجہ دینے کی ضرورت ہے۔
(۳) گزشتہ سال کی طرح امسال بھی رمضان پر خصوصی شمارہ شائع کیا گیا۔ محسوس ہوتا ہے کہ اب ہرسال رمضان کے موقع پر خصوصی شمارہ شائع کرنے کا ارادہ ہے۔ اس سلسلے میں ناچیز کا مشورہ یہ ہے کہ رمضان پر ہر سال خصوصی شمارہ نکالنے کے بجائے رمضان کی مناسبت سے مختلف موضوعات پر شمارے نکالے جائیں، مثال کے طور پر اس سال کا شمارہ ’قرآن مجید اور ہمارے مسائل‘ یا اسی جیسے کسی موضوع پر ہوتا تو اچھا تھا۔ باقی سب خیریت ہے، ایک بار پھر شاندار خصوصی اشاعت پر مبارکباد قبول فرمائیں۔
محمد عامر حسین، نئی دہلی

تعارف: admin

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

x

Check Also

آنترپرینیورشپ کے بارے میں پہلے کئی بار سنا تھا اور یہ جاننے ...