ایس ایم سی ۲۰۱۴ ؁ء 
منتخب ممبران تنظیم کے لیے تربیت گاہ
ایس آئی او آف انڈیا کی جانب سے مرکز جماعت اسلامی ہند دہلی میں منتخب ممبران تنظیم کی تربیت اور ان کے علمی، فکری اور ذہنی تزکیے کے لیے ہر میقات کی طرح اس میقات میں بھی ہفت روزہ کل ہند کیمپ کا انعقاد کیا گیا۔ اس کیمپ کا مرکزی موضوع تھا ’’اصلھا ثابت وفرعھا فی السماء‘‘۔جناب اعجاز اسلم صاحب سکریٹری جماعت اسلامی ہند کے درس قرآن سے اس کیمپ کا آغاز ہوا، پہلے سیشن میں جنرل سکریٹری برادر سرور حسن نے افتتاحی کلمات پیش کئے اور مرکزی سکریٹری برادر عبدالودود نے ایس ایم سی ۲۰۱۴ ؁ء کا تعارف پیش کیا۔کیمپ کے اہم موضوعات کچھ اس طرح تھے:
نظریاتی بحث کا طریقہ کار، تجدید واحیائے دین، ساؤتھ ایشیا کی اسلامی تحریکات، ریسرچ اور نالج پروڈکشن، فقہ اور اس کے اہم مباحث، اسلامی تحریکات اور اسلامی انقلاب کا طریقہ کار، اسلامی تہذیب میں علم کا ارتقاء، اسلامی کا فکری ورثہ، مضبوط تنظیم، تخلیقی سوچ اور پیہم جدوجہد، فلسفہ توحید، ہندوستان کی تہذیبی رنگارنگی: ایک تجزیہ، ہندوستانی سماج کو درپیش چیلنجز اور حل، اسلامائزیشن آف نالج، سماجی تبدیلی کا نظریہ، آئیڈیا آف انڈیا، تعلیمی فلسفوں کی تفہیم، ہندوستان میں تعلیم: پالیسی، اصلاح اور نفاذ، ہماری تنظیم اور ہمارا وژن، جماعت اسلامی: ماضی، حال اور مستقبل۔ اس کیمپ کے اہم مقررین میں ڈاکٹر محمد رفعت سکریٹری جماعت اسلامی ہند، ڈاکٹر محمد عنایت اللہ اسد سبحانی معروف اسلامی دانشور، مولانا اقبال ملا صاحب سکریٹری جماعت اسلامی ہند، عمیر انس سابق سی اے سی ممبر ایس آئی او آف انڈیا، ڈاکٹر محی الدین غازی ہیڈ آف ریسرچ دارالشریعہ متحدہ عرب امارات، مولانا رفیق قاسمی سکریٹری جماعت اسلامی ہند، ڈاکٹر حسن رضا رکن مرکزی مجلس شوری جماعت اسلامی ہند، جناب نصرت علی صاحب جنرل سکریٹری جماعت اسلامی ہند، مولانا محمد فاروق خاں صاحب معروف اسلامی دانشور، ایس امین الحسن صاحب سابق صدرتنظیم ایس آئی او آف انڈیا، ڈاکٹر وقار انور صاحب رکن شوری جماعت اسلامی ہندحلقہ دہلی، ڈاکٹر جاوید ظفر سابق سکریٹری ایس آئی او آف انڈیا، ڈاکٹر قاسم رسول الیاس جنرل سکریٹری ویلفیئر پارٹی آف انڈیا، ڈاکٹر رضی الاسلام ندوی سکریٹری تصنیفی اکیڈمی جماعت اسلامی ہند، ڈاکٹر مدھوپرساد سابق پروفیسر دہلی یونیورسٹی، پروفیسر وکاس گپتا دہلی یونیورسٹی، مولانا عبدالسلام اصلاحی اسسٹنٹ سکریٹری جماعت اسلامی ہند، سید سعادت اللہ حسینی سابق صدرتنظیم ایس آئی او آف انڈیا، شاہنواز علی ریحان سابق سکریٹری ایس آئی اوآف انڈیا، اور امیرجماعت اسلامی ہند مولانا سید جلال الدین انصر عمری تھے۔سات روزہ اس کیمپ میں شرکاء کی جانب سے بھی کئی پروگرامس پیش کئے گئے، بک ریویو پیش کئے گئے، پینل ڈسکشن اور ادبی محفل منعقد ہوئی، کلچرل پروگرامس بھی ہوئے۔ پروگرام کے آخرمیں اوپن سیشن اور تأثراتی سیشن بھی رکھاگیا۔ کیمپ کے اختتام پر صدرتنظیم برادر اشفاق احمد شریف نے زادراہ کے طور پر نوجوان ساتھیوں کو ان کا مقام یاددلایا، انہوں نے بتایا کہ ابھی ملک، ملک کے تعلیمی اداروں اور ملک کے نوجوانوں کی کیا صورتحال ہے اور یہ صورتحال ہم سے کیا مطالبہ کرتی ہے۔ آخری روز برادر انیس الرحمن سابق صدرحلقہ کی رہنمائی میں دہلی کے تاریخی مقامات کی سیر کا پروگرام بھی بنایا گیا۔
ایس آئی او اردو یونٹ الجامعہ شانتاپرم کی جانب سے 
دھنک رنگ ۲۰۱۴ ؁ء کا انعقاد
۱۲؍ تا ۱۴؍ستمبر کوایس آئی او اردو یونٹ الجامعہ الاسلامیہ شانتاپرم کیرلانے ایک کلچرل پروگرام بعنوان ’دھنک رنگ‘ کا انعقاد کیا۔ یہ ایس آئی او اردو یونٹ کی نئی میقات ۲۰۱۴ ؁ء تا ۲۰۱۵ ؁ء کا پہلا پروگرام تھا۔ سکریٹری اردو یونٹ برادرمحمد شاہد خان نے اس موقع پر استقبالیہ پیش کیا، اور تمام ہی شرکاء اور مہمانوں کا تہہ دل سے استقبال کیا۔
ایس آئی او آف انڈیا کے سابق صدرتنظیم جناب کے کے سہیل صاحب بطور مہمان خصوصی تشریف لائے۔ افتتاحی سیشن میں مہمان خصوصی کے ہاتھوں ’دھنک رنگ‘ کی تھیم پر بنائی گئی شارٹ فلم ریلیز کی گئی۔ افتتاحی سیشن میں مہمان خصوصی نے خطاب کرتے ہوئے ’ثقافت اور ثقافتی سرگرمیوں نیز دعوت دین کے سلسلے میں ان کی اہمیت پرتفصیلی روشنی ڈالی۔ صدر یونٹ برادر ذوالقرنین حیدر سبحانی نے اس موقع پر مہمان خصوصی کو مومنٹو پیش کیا۔
اس کے علاوہ جامعہ کے اسٹوڈنٹ ایکٹوٹیز کے ڈائرکٹر اے پی شرف الدین ، مولانا ضیاء الرحمن فلاحی مدنی، برادر سدید ازہر اور دیگر مہمانوں نے بھی اس موقع پر اپنے اپنے تأثرات کا اظہار کیا۔ سیشن کے آخر میں صدر یونٹ برادر ذوالقرنین حیدر سبحانی نے تمام مہمانوں، ذمہ داروں اور شرکاء پروگرام کایونٹ کی نئی میقات کے اس دھماکہ خیز آغاز پر شکریہ ادا کیا۔
اس کے بعد دو دون تک سلسلہ وار مختلف قسم کے دلچسپ مسابقات ہوئے جن میں برجستہ خطابت، کوئز، ڈرامے، مونو ایکٹ، مائم، نکڑ ناٹک، قوالی اور دوسرے مسابقے ہوئے۔ پروگرام کے اختتامی سیشن میں تمام ہی پوزیشن ہولڈرس کو ان کی کارکردگی پر انعامات سے نوازا گیا۔
انٹر اسکول مسابقتی جلسہ’اسکولاسٹک‘
ایس آئی او چنئی کی جانب سے ہر سال ایک انٹر اسکول مسابقتی جلسہ\”اسکولاسٹک\” کے نام سے منعقد کیا جاتا ہے۔ امسال ’اسکولاسٹک‘ یکم ستمبر 2014ء کو چنئی کے یگمور میوزیم آڈیٹوریم میں منعقد کیا گیا۔ اس میں 13؍ اسکولوں سے 375؍ طلبہ اور طالبات شریک ہوئے۔ اسی شام تہنیتی جلسہ رکھا گیا جس میں صدرِ تنظیم برادر اشفاق احمد شریف مہمانِ خصوصی تھے، اس موقع سے کامیاب شرکاء میں انعامات کی تقسیم بھی صدرتنظیم اور دیگر مہمانوں کے ہاتھ ہوئی۔
قرآن کوئز مقابلہ
دھولیہ۔’’پیغمبر اسلام کی زندگی ہمارے لیے نمونہ ہے۔طلبہ و نوجوان دین کے سچے داعی بنیں۔‘‘ان خیالات کا اظہار محترم سہیل امیر شیخ (رکن مرکزی مجلس شوریٰ،ایس آئی او آف انڈیا) نے ایس آئی او دھولیہ یونٹ کی جانب سے منعقد جلسہ تقسیم انعامات و اسناد میں کیا۔ رمضان المبارک کی مناسبت سے ایس آئی او دھولیہ یونٹ کی جانب سے منعقد کئے گئے قرآن کوئز مقابلہ میں کامیاب طلبہ و طالبات کو مومنٹو، سند، ونقد انعامات سے نوازا گیا۔
چندر کانت اسکوٹرس گراونڈ پر منعقدتقسیم انعامات کے جلسہ میں اسٹیج پرمحترم سہیل امیر شیخ،جناب حافظ عبدالحق انصاری (امیر مقامی، جماعت اسلامی ہند،دھولیہ)اور برادر محمدعاصم صابر (صدر مقامی،دھولیہ یونٹ) رونق افروز تھے۔افتتاحی کلمات پیش کرتے ہوئے صدر مقامی نے کہاکہ’’طلبہ و نوجوانوں کو ایک صالح معاشرہ کی تشکیل کے لئے تیار کرناہے۔ساتھ ہی ان کے مسائل حل کرنا،ان کی رہنمائی کرنا،یہی ہمارے لیے راہ عمل ہے۔ طلبہ و طالبات قرآن کی طرف رجوع ہوجائیں یہی اس قرآن کوئز مقابلہ کا مقصد ہے۔‘‘اس مقابلہ میں شہر دھولیہ کے تقریباََچودہ سو طلبہ و طالبات نے حصہ لیا۔
نیشنل اردو ہائی اسکول کے معلم شمس الحسن سر نے اپنے تأثرات بیان کرتے ہوئے کہاکہ طلبہ میں اس سے قرآن کو سمجھنے کی رغبت پیدا ہوئی ہے۔ اسی طرح ایل ایم سردار اردو کالج کے معلم جناب منظو ر سر نے طلبہ کو قرآن سمجھ کر پڑھنے کی ترغیب دی۔ساتھ ہی دونوں صاحبان نے ہر سال اس سلسلہ کو جاری رکھنے کی خواہش ظاہر کی۔طلبہ وطالبات، اساتذہ کرام اور سرپرستوں کی کثیر تعداد کو مخاطب کرتے ہوئے مقرر خصوصی محترم سہیل امیر شیخ نے تلاوت کا مفہوم بتایا۔شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ’’اللہ کے کلام کو اس کی اپنی زبان میں سمجھنے کی کوشش کریں۔ہمارے طلبہ آج دنیا کی بہت ساری معلومات سے واقف ہیں۔انھیں انٹر نیٹ،فیس بک، فلم، سیر وتفریح سے لگاؤ ہے لیکن کہیں نہ کہیں داعیانہ کردار سے رشتہ ٹوٹ رہاہے۔ سرپرست حضرات اپنے بچوں کو تحفے میں قرآن دیں۔ قرآن کوئز مقابلے کا پہلا انعام نیشنل اردو ہائی اسکول کے دہم جماعت کے طالب علم خان محمد قاسم محمد رفیق نے حاصل کیا۔ دوسرا انعام اینگلو اردو ہائی اسکول کی دہم جماعت کی طالبہ نمیرہ بانو ذاکر حسین نے حاصل کیا۔ اور تیسرا انعام نور اردو ہائی اسکول کی ہشتم جماعت کی طالبہ صائمہ بانو عبدالحلیم انصاری نے حاصل کیا۔اس کے علاوہ بہت سارے طلبہ وطالبات کو تشجیعی انعامات سے بھی نوازا گیا۔تمام ہی شریک طلبہ وطالبات کو سند اور قرآن کے موضوع پر مبنی کتابچہ دیا گیا۔
جلسہ کی کامیابی میں ایس آئی او دھولیہ یونٹ کے معزز ممبران برادر عاصم ظفر، برادراسحق شیخ،برادرشعیب مرزا،برادرعبدالسلام،برادرجنید مرزا،برادرفیض مرزا، برادرتوفیق شیخ،برادرارباز شیخ، اور برادرمحمد عامر نے بھر پور تعاون کیا۔نظامت کے فرائض برادر جاوید اقبال مرزا نے بحسن وخوبی انجام دیئے۔

تعارف: admin

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

x

Check Also

روہت: مزاحمتی تحریکات کے لیے ایک روشن ستارہ – نحاس مالا

روہت ویمولا کے یونیورسٹی انتظامیہ کے دباؤ میں خودکشی کی دوسری برسی ...