Home / متفرق / نظم
Click Here to Read More

نظم

کھا نہ دھوکا گردش ایام سے
اب تو کٹتی ہے بڑے آرام سے

آزمالے اے ستم گر سارے تیر
تجھکو ڈر لگتا ہے گر اسلام سے

گائے تو ایک جانور ہے برہمن
کیا غرض اس کو رحیم و رام سے

میکدے میں شیخ صاحب السلام
بیٹھئے فرمائیے، کس کام سے

عشق کرنا ہے اگر بے خوف کر
کس لئے ڈرتا ہے تو انجام سے

آج بھی شاکرؔ وہی مطلوب ہے
زندگی بدلی تھی جس پیغام سے
شاکرؔ حسین ہریانہ۔الجامعہ شانتاپرم۔

Click Here to Read More

About admin

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

x

Check Also

بلیا کابرقع:دوستوں سے دشمنی اور دشمنوں سے دوستی

ڈاکٹر سلیم خان یوگی ادیتیہ ناتھ کی بلیا ریلی میں رونما ہونے ...